The Latest

وحدت نیوز (گڑہی یاسین) مجلس وحدت مسلمین ضلع شکارپور کے زیراہتمام ضلعی پولٹیکل کونسل اور معززین کا اہم اجلاس پیر چنڈام میں منعقد ہوا۔ اجلاس کے موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم صوبہ سندہ کے سیکریٹری جنرل علامہ مقصودعلی ڈومکی نے کہا کہ سندہ کے منتخب حلقوں سے مجلس وحدت مسلمین اپنے امیدوار کھڑے کر رہی ہے۔ دھشت گردی اور کرپشن ملک کے دو بڑے مسائل ہیں جن کے خلاف ہم نے ہمیشہ جدوجہد کی ہے۔ مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی کا پانچ سالہ دور حکومت ملکی تاریخ کا سیاہ دور رہا، جس میں عوام غیر محفوظ رہے ،ملکی دولت کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا گیا، اور امریکی سامراج کی مداخلت رہی۔ ہم کرپشن اور دھشت گردی سے پاک ، پاکستان بنانا چاہتے ہیں۔

صحافیوں کی جانب سے ایم ایم اے کی حمایت کے سوال پرجواب دیتے ہوئے علامہ مقصودعلی ڈومکی نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن نے کبھی بھی شیعہ نسل کشی کی کھل کر مذمت نہیں کی، ڈیرہ اسماعیل خان جو کہ مولانا کا حلقہ انتخاب اور گھر ہے میں مسلسل شیعیان علی ؑ کا قتل عام ہورہا ہے مگر وہ کبھی اس قتل عام کے خلاف نہیں بولے اور نہ ہی وہ شہداء کے گھر تعزیت کے لئے گئے۔ ایم ایم اے کو اسلام کی بجائے اسلام آباد کی فکر ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ شیعہ علماء کونسل نے اپنے امیدواروں کی حمایت کے لئے رابطہ کیا تو پارٹی مشاورت کے بعد جواب دیا جائے گا، ہم باکردار اور صالح افراد کو پارلیمنٹ میں دیکھنا چاہتے ہیں، ایس یو سی کے ساتھ اشتراک عمل کی صورت نکل سکتی ہے۔ملت کی نمائندہ جماعت کی حیثیت سے باکردارصالح شیعہ امیدواروں کو سپورٹ کریں گے۔

تقریب سے مجلس وحدت مسلمین ضلع شکارپور کے سیکریٹری جنرل برادر فدا عباس لاڑک و دیگر نے خطاب کیا۔ تقریب میں ضلعی صدر شیعہ علماء کونسل برادر احمد علی برڑو، مجلس وحدت کے ضلعی رہنما محبوب علی ابڑو،شاکر حسین، مستنصر مہدی، دریا خان جتوئی و دیگر شریک ہوئے۔

وحدت نیوز(سکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ آغا علی رضوی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ صوبائی حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے اور ذاتیات پر حملہ کر کے گلگت بلتستان کے ظالمانہ آرڈر کے خلاف جاری تحریک کا رخ تبدیل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جی بی آرڈر کے خلاف تحریک کو سبوتاژ کرنے کے لیے حکومت علاقائی ، مسلکی اور دیگر تعصبات کو ہوا دینا چاہتی ہے۔ آج داریل تانگیر سے بلتستان تک کے عوام نے جب حکومت کے نام نہاد اصلاحاتی پیکیج کو مسترد کر دیا اور صوبائی حکومت کے چہرہ کو بے نقاب کیا تو انکی چیخیں نکل رہی ہیں۔ عوام اب باشعور ہوچکی ہے کسی دھوکے اور سازش کا شکار نہیں ہوسکتی ۔

انہوں نے مزید کہاکہ لیگی حکمران چاہتے ہیں کہ گلگت بلتستان میں سانحہ ماڈل ٹاون کا تکرار ہو لیکن عوام نے صبر کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی تمام تر توانائیوںکو نام نہاد پیکیج کو زمین بوس کرنے اور اتحاد و اتفاق کی پرچار کے لیے صرف کریں، وفاقی سرپرستی کے خاتمے کے بعد حکمرانوں کی عقل ٹھکانے آجائیں گے۔ یہ پہلی بار نہیں بلکہ اس سے قبل بھی لیگی حکمران داعش کو بلواکر عوامی احتجاجات پر حملے کروانے کی دھمکیاں ریاستی اداروں کے سربراہان کے سامنے دے چکے ہیں۔ وفاق میں انکے قائد کے ممبی حملے کے متعلق بیان سے ہی واضح ہوگیا ہے کہ وہ ملک اور ریاستی کے کتنے خیرخواہ ہیں۔

 آغا علی رضوی نے کہا کہ گلگت اور بلتستان کو الگ کرنے کی کوشش بہت عرصے سے جار ی ہے لیکن ہر دفعہ عوام نے شعور کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک اکائی بن کر ثابت کیا  ہے کہ اب لڑاو اور حکومت کرو والی پالیسی نہیں چلنے نہیں دیں گے۔ جی بی آرڈر 2018ء صوبائی حکومت کی عوام دشمن پالیسی اور وفاق کی کاسہ لیسی کا منہ بولتا  ثبوت ہے۔حکمران کاسہ لیسی میں حد سے گزر چکے ہیں اور یہ بھی بول چکے ہیں وہ کس طرح کی شرمناک دھندوں میں ملوث رہ چکے ہیں۔

وحدت نیوز(گلگت)  مشیر اطلاعات اور وزیر تعمیرات اپنے گریبان میں جھانکیں تو انہیں معلوم ہوگا کہ وہ کس کھیت کے مولی ہیں۔مولانا سلطان رئیس اور آغا علی رضوی کے خلاف غم و غصہ سے نواز لیگ کی بوکھلاہٹ ظاہر ہورہی ہے۔سلطان رئیس اور علی رضوی گلگت بلتستان کے عوام کے حقیقی ترجمان ہیںجنہوں نے اپنی قائدانہ صلاحیتوںسے خطے کے عوام کے دل جیت لئے ہیں۔

مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے ترجمان محمد الیاس صدیقی نے کہا ہے کہ ہم گلگت بلتستان کے عوامی کے حقوق کی جنگ لڑ رہے ہیں اورآرڈر 2018 گلگت بلتستان کے عوامی امنگوں کے خلاف ہے جسے ہرگز قبول نہیں کرینگے۔نااہل وزیر اعظم کے نااہل کارندے اپنی رسوائی کو چھپانے کیلئے معزز علمائے کرام کے خلاف ہرزہ سرائی پر اتر آئے ہیں۔نواز لیگ جی بی کے عوام کو آئینی حقوق دلوانے میں ناکام ہوکر آرڈر 2018 کو نافذ کرنا چاہتی ہے جو ان کے بادشانہ مزاج کا مظہر ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ اور اس کی ٹیم عوام کے احتجاج کا سامنا کرنے کی سکت نہیں رکھتی اور علاقے کے عوام کو تقسیم کرنے کیلئے دھونس دھمکیوں اور مذہبی تعصب کا سہارا لے رہی ہے ۔گلگت بلتستان کا امن یہاں کے علماء اور عوامی ایکشن کمیٹی کی کاوشوں سے بحال ہوا ہے، حفیظ الرحمن کے اقتدار سے امن کو مشروط کرنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں۔گلگت والوں کا دماغ پھراکر کر بلتستان کو ہلادینے کی بات کرنے والے صاف صاف بتادیں کہ وہ کیا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین نواز لیگ کی ہرسازش کا ڈٹ کرمقابلہ کرے گی اور گلگت بلتستان کے عوام کو جغرافیہ اور فرقے کی بنیاد پر تقسیم کرنے کی ہر سازش کو ناکام بنادے گی۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے زیر اہتمام سالانہ دعوت افطاروفکر امام خمینی ؒسیمینار بسلسلہ 29ویں برسی امام راحل خمینی بت شکن کا انعقاد آئی آر سی لان میں کیا گیا ،اس تقریب میں مختلف سیاسی وسماجی شخصیات ، پرنٹ والیکٹرونک میڈیا کے نمائندگان، قومی وملی تنظیمات کے رہنمائوں سمیت مختلف مکاتب فکر کے علمائے کرام نے شرکت کی، سیمینار سے خصوصی خطاب مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری نے کیا انہوں نے عالمی استعمار کے خلاف امام خمینی ؒ کی عالمی تحریک کے مختلف پہلوئوں پر تفصیلی روشنی ڈالی اور سرزمین مقدس فلسطین پر غاصب اسرائیل کے ناجائز قبضے کے خلاف امام خمینی ؒ کے حکم پر عالمی یوم القدس کی اہمیت پر بھی گفتگو کی، اس سے قبل دعوت افطار اور سیمینار کے شرکاءنے بزرگ عالم دین ، مجلس علمائے شیعہ پاکستان کے مرکزی صدر اور امام جمعہ جامع مسجد نور ایمان علامہ مرزایوسف کی زیر اقتداءنماز مغربین باجماعت اداکی، ایم ڈبلیوایم کے زیر اہتمام اس دعوت افطار وفکر امام خمینی ؒ سیمینار میں ہیت آئمہ مساجد وعلمائے امامیہ پاکستان کے وفدنے مرکزی جنرل سیکریٹری علامہ سید باقرعباس زیدی کی سربراہی میں شرکت کی جبکہ اس موقع پر امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن ، پیام ولایت فائونڈیشن، امامیہ آرگنائزیشن، خیر العمل ٹرسٹ کے وفود سمیت جعفریہ الائنس کے رہنماشبر رضا، مرکزی تنظیم عزاداری کے رہنما ایس ایم نقی، شہید فائونڈیشن کے مرکزی رہنما سید عابد رضوی ،،فرزند علامہ سید عرفان حیدر عابدی مرحوم علامہ سید محمد علی عابدی، سابق رکن سندھ اسمبلی سیدمیجر (ر) سید قمرعباس رضوی،، عالم اہل سنت علامہ عبد اللہ جونا گڑھی،علامہ سجاد شبیر رضوی، ایم ڈبلیوایم کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ سید احمد اقبال رضوی،مرکزی سیکریٹری امور تنظیم سازی سید مہدی عابدی ، صوبائی سیکریٹری جنرل علامہ مقصودڈومکی،صوبائی پولیٹیکل سیکریٹری علی حسین نقوی،ڈویژنل سیکریٹری جنرل علامہ محمد صادق جعفری، علامہ اظہر حسین نقوی سمیت دیگر معزز شخصیات نے بھرپور شرکت کی ، بعد از ختم سیمینارشرکاءکیلئے عشائیے کا بھی اہتمام تھا۔

وحدت نیوز (اسلام آباد)  مجلس وحدت مسلمین ضلع راولپنڈی،اسلام آباد اور امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن راولپنڈی ڈویثرن کی یوم القدس کے حوالے سے مشترکہ میٹنگ آج ایم ڈبلیوایم کے مرکزی سیکرٹریٹ میںمنعقد کی گئی ۔جس میں القدس کمیٹی کا قیام عمل میں لایاگیا اور وفا عباس نقوی کو کوارڈینیٹر منتخب کیا گیا ۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ریلی اپنے پرانے روٹ امام بارگاہ جی سکس ٹو سے نکالی جائے گی ۔میٹنگ میں ایم ڈبلیو ایم ضلع راولپنڈی کے سیکرٹری جنرل علامہ اکبر کاظمی اور اسلام آباد ضلع کے سیکرٹری جنرل علامہ حسین شیرازی نے شرکت کی ۔آئی ایس او کے ڈوثرنل صدر برادر طاہر بھی اس موقع پہ موجود تھے۔

وحدت نیوز (کراچی )  مجلس وحدت مسلمین کی مرکزی سیاسی کونسل نے ایم ڈبلیوایم سندھ کے پولیٹیکل سیکریٹری اور معروف سماجی شخصیت سید علی حسین نقوی کو آمدہ قومی انتخابات میں حلقہ PS-89ضلع ملیر کراچی سے اپنا امیدوار نامزد کردیاہے، مرکزی پولیٹیکل سیل سے جاری ایک بیان میں کہاگیاہے کہ وطن عزیز میں موثر سیاسی تبدیلی کرپشن اور لوٹ مار سے پاک معاشرے کی تشکیل کیلئے ایم ڈبلیوایم جنرل الیکشن  2018 میں ملک کے مختلف حلقوں سے قومی وصوبائی اسمبلی کی نشستوں پر قابل، باکردار اور اہل امیدواروں کو میدان میں اتارے گی، تاحال کسی جماعت کے انتخابی اتحاد یا سیٹ ایڈجسٹمنٹ کا حتمی فیصلہ نہیں کیا گیا ، ملک کی مختلف بڑی سیاسی ومذہبی جماعتوں سے بات چیت فیصلہ کن مراحل میں ہے ، انشاءاللہ جلد مرکزی قیادت آمدہ انتخابی پالیسی کا اعلان کرے گی۔

وحدت نیوز (لاہور)  مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل پنجاب ڈاکٹر سید افتخار نقوی کا کہنا تھا کہ آج ایک دھوکے باز اور کرپٹ حکومت کا ایک سیاہ باب بند ہو گیا۔ ان سیاسی پنڈتوں نے 2013 میں عوام سے بے پناہ وعدے کیے اور عوام کو سنہرے خواب دکھا کر بے وقوف بنایا۔ آج یہ لوگ عوام کو جواب دیں کہ انہوں نے 5 سالہ دور حکومت میں کیا تیر مارے۔

انہوں نے کہا کہ میاں شہباز شریف 2018 میں لوڈ شیڈنگ کے خلاف مینار پاکستان پر احتجاجی کیمپ لگا کر اچھی ایکٹنگ کرتے تھے اور الیکشن مہم میں 6 ماہ میں لوڈ شیڈنگ ختم کرنے کے جھوٹے وعدے کرتے رہے،اور پانچ سال بعد کہتے ہیں کہ اگر کل سے لوڈ شیڈنگ ہوئی تو ہم ذمہ دار نہیں۔

 ڈاکٹر افتخار نقوی کا مزید کہنا تھا کہ پنجاب پر دس سال حکومت کرنے کے بعد نہ ہی کوئی ترقی ہوئی اور نہ ہی لوڈ شیڈنگ ختم کرنے سمیت کوئی وعدے وفا ہوئے۔ ہم سمجھتے ہیں کہ آج کرپٹ حکمرانوں سے نجات کا دن ہے اورقوم کو یوم نجات منانا چاہیے۔ عوام کو چاہیے کہ 25 جولائی کوووٹ کی طاقت سے سوچ سمجھ کر فیصلہ کریں تاکہ اس ظالم و جابر اور کرپٹ نظام کا خاتمہ کیا جاسکے۔

وحدت نیوز (گلگت ) اقتدار کے چھن جانے کے خوف سے لیگی حکومت کے اوسان خطا ہوگئے ہیں۔لیگی حکومت کے وزراء اور مشیر دھمکیوں، الزام تراشیوں کے ذریعے علاقائیت اور فرقہ واریت کو فروغ دینے کی ناکام کوشش کررہے ہیں۔دھونس دھمکیوں، الزام تراشیوں اورکردار کشی کے ذریعے عوامی آواز کو دباناشیطان صفت حکمرانوں کا وطیرہ رہا ہے

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما شیخ نیئر عباس مصطفوی نے نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نوازلیگ آمریت کی پیداوار جماعت ہے اور نواز لیگ کے بانی ضیاء الحق نے پاکستان میں فرقہ واریت اور علاقائی تعصب کو فروغ دیکر پورے پاکستان کو بدامنی سے دوچار کردیااور ان کے بوئے ہوئے بیج آج تناور درخت بن چکے ہیں۔وفاق میں نواز لیگ کی بساط لپٹتے ہی صوبائی حکومت کواپنا اقتدار خطرے میں نظر آرہا ہے اور ان کے وزیر ومشیر ہواس باختہ ہوکر بابصیرت قیادت کے خلاف صف آرا ہوچکے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ نجاست اور غلاظت کے پروردہ لوگ سید علی رضوی کے کردار پر انگلی اٹھارہے ہیں لیکن اب جی بی کے عوام بیدار اور آگاہ ہیں وہ مفاد پرست ٹولے کی سیاست کو خوب سمجھ رہے ہیں اور کسی بھی سازش کو ناکام بنائینگے۔وزیر اعلیٰ اپنے وزیروں اور مشیروں کو لگام دیں جو بے بنیاد الزام تراشیوں اور دھمکیوں سے عوام میں اشتعال پیداکرکے علاقے کو بد امن کرنا چاہتے ہیں۔ ہم حکومت کو متنبہ کرتے ہیں کہ وہ اپنا قبلہ درست کرے ورنہ عوامی سیلاب ہرخشک و تر کو بہالیجانے پر قادر ہوتا ہے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) جسٹس ناصر الملک کا بطور نگران وزیر اعظم تقررخوش آئندہے امید کرتے ہیں نگران سیٹ اپ شفاف الیکشن کے انعقاد کو یقینی بنائے گاان خیالات کا اظہار مرکزی سیکرٹری سیاسیات مجلس وحدت مسلمین پاکستان سید اسدعباس نقوی نے میڈیا سیل سے جاری بیان میں کیا  ان کا کہنا تھا کہ ملکی ترقی کے لئے جمہوری حکومتوں کے تسلسل کی روایت کو مظبوط بنانا ہو گا،نگران حکومت پر شفاف طریقے سے انتقال اقتدار کی بھاری ذمہ داری عائد ہو چکی ہے۔ن لیگ حکومت نے اپنے پانچ سالہ دور میں کرپشن لوٹ مار کے نئے ریکارڈ قائم کئے ۔

انہوں نے مزید کہاکہ ملک میں غربت کی شرح میں اضافہ ہوا۔ تعلیمی اور صحت کے بجٹوں کو سٹرکوں میڑوز پلوں پر لگا دیا گیا۔جھوٹے اعداد وشمار کے گورگھ دھندے کےساتھ عوام کو دھوکہ دیا جاتا رہا۔عوام کے لئے اب پھر فیصلہ سازی کا ایک اور نادر موقع آیا ہے ۔ مادر وطن کے ساتھ مخلص اور دیانت دار افراد کو ووٹ کر کے عوام اپنی قسمت بدل سکتی ہے ۔اقربا پروری برادری قوم ۔مذہب اور لسانیات کی سیاست نے ملک کو تباہ حال کر دیا ہے ۔ انشاللہ مجلس وحدت مسلمین ملک بھر سے تعلیم یافتہ اور دیانت دار امیدواروں کو میدان میں اتارے گی اور ملک دشمن کرپٹ اور لٹیروں کا رستہ روکے گی

وہ صفات جو خدا کو پسند ہیں

وحدت نیوز (آرٹیکل) انسان خطاء کا پتلا ہے اور اللہ تعالی نے اس کی غلطیوں کو معاف کرنے کے لئے بے شمار طریقے بتائے ہیں انبیاء کرام کو بھیجا ہے جو اس کی تربیت کر سکیں، الہامی کتابیں نازل فرمائی، امت مسلمہ کے لئے تو اللہ نے پورا کا پورا مہینہ رحمتوں، مغفرتوں اور برکتوں کا نازل فرمایا جس کو ہم رمضان المبارک کہتے ہیں اس مہینے میں اللہ تعالی چند ایک گناہوں کو چھوڑ کر تقریبا تمام گناہوں کو معاف فرمادیتے ہیں۔آج کل ہم دیکھتے ہیں کی مسلمان بہت سارے اندرونی و بیرونی مسائل میں الجھے ہوئے ہیں ان حالات میں اگر کوئی اسلام کے بارے میں زیادہ معلومات نہیں رکھتا ہو تو مسلمانوں کی حالات دیکھ کر ان سے متنفر ہوتا ہے وہ سوچتا ہے کہ شاید ان کی زندگی میں کوئی نظم کوئی مقصد نہیں ہے اس لئے یہ لوگ اس دہانے پر پہنچے ہوئے ہیں۔ لیکن خداوند رحمان نے انسانوں کو ایک منظم برنامہ کے ساتھ خلق فرمایا ہے اور ہمیں بتایا گیا ہے کی اس دنیا میں کیسے زندگی گزارنی ہے اور ہمارا مقصد و ہدف کیا ہے حتا ہمارے چھوٹے چھوٹے مسائل سے لیکر بڑے بڑے مشکلات غرض ہر چیز کے لئے قوانین بنائے ہیں تاکہ انسان گمراہ نہ ہوں اور اس  پر عمل کریں تو ہمیشہ فلاح پاسکتے ہیں۔ لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑھتا ہے کہ ہم نے اصل اسلام کو فراموش کیا ہے اور جزیات کو لیکر ایک دوسرے سے لڑ رہے ہیں جس کا نہ خود انسان کو فائدہ ہے اور نہ ہی معاشرے کو بلکہ فقط تفرقہ اور دشمنی کا باعث بنتا یے۔میں یہاں پر انسان کی پانچ عادتیں بیان کرنا چاہتا ہوں کی ان عادتوں کو خدا و پیامبر نے پسند فرمایا ہے اور یہ عادتین انسان کی دنیا و آخرت دونوں میں فلاح کے کئے کافی ہیں۔

واقعہ کچھ یوں ہے کہ جنگ احزاب(خندق) کے دوران یہودی قبیلہ بنی قریظہ جو مدینہ میں آباد تھے اور مسلمانوں کے  ساتھ معاہدہ کیا ہوا تھا کہ وہ مسلمانوں کے خلاف کسی سازش کا حصہ نہیں بنیں گے اس کے بدلے میں مسلمانوں کو بھی ان سے کوئی سروکار نہیں ہوگا۔ لیکن جنگ احزاب میں بنی قریظہ مشریکین کے ساتھ مل جاتے ہیں اور مدینہ کے اندر انتشار و فساد پیدا کرنے کی کوشش کرتے ہیں جو مسلمانوں کے لیے خارجی دشمنوں سے زیادہ سخت تھا۔ بحرحال پیامبر کے حکم پر قلعہ بنی قریظہ کا محاصرہ کیا جاتا ہے اور ہلکی پھلکی لڑائی کے بعد تمام یہودیوں کو اسیر بنایا جاتا ہے اور ان کے تمام مردوں کو خیانت کے جرم میں قتل کیا جاتا ہے سوائے ایک یہودی شخص کے، وہ یہودی پوچھتا ہے کہ مجھے کیوں رہا کیاگیا ہے تو اس وقت پیغمبر اکرم (ص) فرماتے ہیں تم میں پانچ خصوصیات ایسی ہیں کہ جسے خدا و پیامبر نے پسند فرمایا ہے۔ جب رسول اکرم یہ صفات بیان کرتے ہیں تو وہ شخص قسم کھا کر کہتا ہے کہ محمد اور اس کے خدا نے سچ کہا ہے پھر وہ اسلام قبول کرتا ہے اور ایک جنگ میں شہید ہوجاتا ہے۔

رسول اکرم ص نے اس شخص کی جو صفات بیان کیا تھا وہ مندرجہ زیل ہیں ۔۱ غیرت ۲.صداقت ۳۔ سخاوت ۴۔ شجاعت ۵۔ حسن خلق۔

اگر ہم ان کی مختصر مختصر تعریف کریں تو غیرت اسے کہتے ہیں کہ ہر چیز جس کی حفاظت ضروری ہو اس کی نگھبانی کرنا ہے، غیرت دو قسم کے ہیں ایک ذاتی ایک دینی، ذاتی یعنی ناموس وغیرہ کی حفاظت اور دینی یعنی احکام دین کی پاسداری وغیرہ۔ صداقت یعنی سچائی جس کا مخالف جھوٹ یے اور صداقت کی اہمیت کا اندازہ قرآن کریم کی اس آیت سے ہوتا ہے کہ جس میں خداوندعالم فرماتا ہے:" اے ایمان والو! اللہ سے ڈرتے رہو اور سچوں (صادقین) کے ساتھ رہو"۔ اس کے برعکس کہتے ہیں کی جھوٹ و فریب ہر چیز کی تباہی کا باعث بنتا ہے۔ سخاوت: سخاوت کے بارے میں امام علی ع فرماتے ہیں کہ "سخاوت مند شخص وہ ہے جو مال کو حلال طریقے سے حاصل کرتا ہے اور حلال راستے میں خرچ کرتا ہے۔" اگر کوئی سخی ہے تو اس کا مطلب ہے کہ اسے اپنے نفس پر ملکہ حاصل ہے وہ اپنے نفس کی تابع نہیں ہے اور نہ ہی اس کو اپنی تعریف یا بڑھائی کی فکر ہے وہ فقط نیکی اور رضایت خدا کی خاطر اپنے مال کو مصرف کرتا ہے۔

شجاعت:شجاعت سب سے بہترین صفت ہے اگر شجاعت نہ ہوتو غیرت صداقت اور ظلم کے خلاف آواز اٹھانا ممکن ہی نہیں۔ حسن خلق: حسن خلق کے بارے میں پیامبر اکرم ص فرماتے ہیں کہ "اے لوگو تم میں اس قدر توانائی نہیں ہے کہ تم اپنے مال و دولت سے لوگوں کی خدمت کرو اور ان کو راضی کر سکو پس تم لوگوں کے ساتھ خوش دلی اور خوش اخلاقی سے پیش آیا کرو"۔ دوسری جگہ پر فرماتے ہیں کہ تم چاہتے ہو کہ تمھارا وجود ھوا و باران، اور چاند و سورج کی طرح بن جائے کہ اس سے دنیا میں موجود ہر چیز فیض حاصل کر سکیں تو لوگوں کے ساتھ خوش اخلاقی و خوش دلی کے ساتھ پیش آیا کرو۔

خوش اخلاقی و خوش رفتاری کے حوالے سے ایک واقعہ صحابی رسول سعد بن معاذ سے منسوب ہے کہ جب آپ کی رحلت ہوئی تو خود پیامبر گرامی نے ان کی نماز جنازہ ادا کیا اور ان کو قبر میں اتارا پھر مسلمانوں سے مخاطب ہو کرفرماتے ہیں کہ آج سعد بن معاذ کے نماز جنازے میں ۹۰ ھزار فرشتوں نے شرکت کی ہیں جب مسلمان یہ سنتے ہیں تو سعد بن معاذ کے والدہ کو مبارک باد پیش کرتے ہیں کہ آپ کے فرزند کی نماز جنازہ کس قدر شان و شوکت سے ادا ہوئی ہے کہ فرشتے شامل ہوئے ہیں اور پیامبر آخرزمان نے امامت کی ہے۔ کچھ وقت گزرنے کے بعد حضرت محمد (ص) کے چہرہ مبارک کا رنگ تغیر ہونے لگتا ہے اصحاب پوچھتے ہیں یا رسول اللہ کیا ماجرا ہے ابھی تو آپ خوش تھے اب آپ کے چہرے پر ناراضگی کے آثار کیوں؟ پیامبر نے فرمایا میں ابھی سعد بن معاذ کے ہڈیوں کی ٹوٹنے کی آواز کو سُن رہا ہوں وہ فشار قبرکے سخت عذاب سے گزر رہا ہے۔ اصحاب نے سوال کیا یا رسول اللہ ابھی تو آپ نے ان کی نماز جنازہ میں فرشتوں کی آمد کی خبر دی تھی؟ اور اب عذاب کی ! رسول اکرم (ص) نے فرمایا بیشک ایسا ہی ہے سعد بن معاذ کے سارے کام اچھے تھے لیکن وہ گھر پر اپنے بیوی بچوں سے بد اخلاقی سے پیش آیا کرتا تھا جس کی وجہ سے فشار قبر کے مرحلے سے گزرنا پڑرھا ہے۔

اللہ اکبر !عدالت خداوند دیکھیں ایک یہودی کو اس کے)اچھی( خصلتوں اور عادتوں کی وجہ سے بخش دیتا ہے اور موقع فراہم کرتا ہے کہ وہ حق کو اپنایئں اور دوسری جانب صحابہ رسول اکرم کو اس کے ایک بُرے خصلت کی وجہ سے عذاب میں مبتلا کردیتا ہے۔

 لہذا ہمیں اس ماہ مبارک میں اپنی کوتاہیوں کو دیکھنا چاہئے، ہمیں مسلمان ہونے کے ناطے اپنی غلطیوں کو تسلیم کرنا چاہئے اور اس بابرکت مہینے میں سعی و کوشش کرنی چاہئے کہ ہم اپنے برُے کاموں کو ترک کریں اور اچھے کاموں کو اپنائیں، کم سے کم اُس یہودی میں موجود پانچ صفات کو اپنے اندر تلاش کریں اور جو کمی پیشی ہے اس کو پورا کرنے کی کوشش کریں تاکہ خدا و رسول ہم سے بھی خوش ہوں کیونکہ یہ ہماری اصلاح کا بہتریں موقع ہے اس ماہ کوصرف افطاری اور سحری کے چٹ پٹوں میں نہیں گزارنا چاہئے۔ یقین کریں اگر ہم میں یہ پانچ خصلتیں آجائیں اور اپنے گھر والوں کے ساتھ خوش اخلاقی سے پیش آنا شروع کریں تو ہم اپنے گھر کے ساتھ ساتھ پورے معاشرے کو بھی جنت بنا سکتے ہیں ۔ اس طرح ہم اپنے اندر موجود انسانیت اور اصل مسلمانیت کو بیدار کر سکتے ہیں اور اگر ہم اس کام میں کامیاب ہو گئے توہمیں درپیش گھریلو و معاشرتی مسائل و مشکلات کا اسی فیصد خاتمہ ممکن ہے، لہذا اس ماہ مبارک رمضان کو ایسے ہی ہاتھ سے نہ جانے دیں اگر اہم سب اپنی ایک ایک غلطی کی بھی اصلاح کر سکیں تویہ ہماری بڑی کامیابی ہیں اور اسی ایک کامیابی سے ہم اپنی اور معاشرے کی اصلاح کر سکتے ہیں۔

تحریر۔۔۔۔ناصررینگچن

Page 5 of 859

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree