The Latest

وحدت نیوز(سکھر) مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پاکستان ناصرعباس شیرازی پاکستان کی سرزمین پرمکتبِ اہلبیتؑ نے بہت خون دیا پاکستان کے دستور پاکستان کےآئین کی سلامتی اور حفاظت کے لئے، شہدا کا لہو پاکستان کے اندر ہمیں زندہ رہنے کا ہنرعطا کرتاہےاور شہدا وہ ہستیاں ہیں جن کے بارے میں خدا نے کہا ہے کہ وہ زندہ ہیں مگر ہم ان کا شعور نہیں رکھتےپاکستان میں عزت اور سربلندی کے راستے کے لئے شہداء کے راستے کو زندہ کرنا ضروری ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نےامامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن سکھر ڈویژن کےکنونشن کے موقع پر شبِ شہدا ءسے خطاب کرتےہوئے کیا۔

انہوںنے مزید کہاکہ شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی اور شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی پاکستان میں سالار شہداء ہیں اور انشااللہ وہ امور جن کے لئے ان دونوں ہستیوں نے زندگی قربان کی پاکستان کو عالمی استعمارسے آزاد کروانے کے لئے پاکستان کو مضبوط اور قدرت مند ملک بنانے کے لئے پاکستان کی آزاد خارجہ پالیسی بنانے کے لئے پاکستان کو ایک محفوظ اور پرآمن ملک بنانے کے لئے دنیا بھر کے مظلومین کے ساتھ محبت اور آخوت کا رشتہ نبھانے کے لئے پاکستان میں جو انھوں نے کردار ادا کیا ہے انشاءاللہ ہمارا یہ تجدید عہد ہے کہ ہم اس راستے کو جاری رکھیں گے۔

وحدت نیوز (کراچی) مرکزی سیکریٹری جنرل مجلس وحدت المسلمین علامہ راجہ ناصر عباس جعفری و مولانا سید حسن ظفر نقوی کی آج بروز جمعہ شہید سید علی رضا عابدی کی رھائشگاہ کراچی پہ انکے اھل خانہ سے ملاقات اور تعزیت ۔ ملاقات کہ دوران شہید علی رضا عابدی کہ والد ، والدہ و ابل خانہ بھی موجود تھے ۔ اس موقع پہ شہید علی رضا عابدی کہ پرعزم والدین نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ وہ اپنے شہید فرزند کہ مشن کو جاری رکھیں گے اور ظالموں کہ سامنے کسی صورت سرنگوں نہیں ھونگے ۔ قائد وحدت علامہ راجہ ناصر عباس نے شہید علی رضا عابدی کہ بہیہمانہ قتل کی شدید مذمت کرتےہوئے انکے قاتلوں کی گرفتاری کا فوری مطالبہ کیا اور انکے اھل خانہ کو اپنی طرف سے قاتلوں کی گرفتاری کہ لیے کئ جانے والی کوشیشوں میں ھر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔ واضح رہے کہ سابق رکن قومی اسمبلی شہید علی رضا عابدی کو ۲۵ دسمبر کی شب انکے گھر کہ بابر سفاک دہشتگردوں نے فائرنگ کرکے شہید کردیا تھا اور فرار ہوگئےتھے ۔ شہید علی رضا عابدی نے تمام قومی فورمز میں شیعہ گمشدگان ، شیعہ نسل کشی سمیت تمام اھل قومی موضوعات پہ آواز اٹھاتے رھے تھے ۔ وہ دھشتگردی و مذہبی انتہا پسندی بالخصوص کالعدم سپاہ صحابہ و لشکر جھنگوی کہ شدید مخالف جانے جاتے تھے ۔ اللہ رب العزت شہید کہ درجات کو بلند فرمائے اور انکے سفاک و بے رحم قاتلوں کو نیست و نابود کرے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ)حلقہ پی بی 26 سے آزاد امیدوار ذولفقار علی خان جنکا انتخابی نشان بادشاہ ہے نے کوئٹہ پریس کلب میں پریس کانفرنس کر کے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے نامزد امیدوار سید محمد رضا (آغا رضا) کے حق میں الیکشن لڑنے سے دستبردار ہونے کا اعلان کیا، اس موقع پر ایم ڈبلیوایم کوئٹہ ڈویژن کے سیکریٹری جنرل کربلائی رجب علی ، معاون سیکریٹری جنرل عباس علی اور دستبردارہونے والے آزاد امیدوار  ذولفقار علی خان اور ان کے سپورٹرز بھی موجود تھے، پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے  ذولفقار علی خان نے کہاکہ میرے تمام سپورٹرز ، دوست احباب سےگذارش کرتا ہوں کہ  ایم ڈبلیوایم کے نامزد امیدوار برائے حلقہ پی بی 26 سید محمد رضا کو31دسمبر کو ووٹ دیکر کامیاب بنائیں جن کا انتخابی نشان خیمہ ہے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) حلقہ پی بی 26کوئٹہ 3ضمنی انتخاب کے لئے نامزد آزاد امیدوار انجینئر ہادی عسکری نے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے نامزد امیدوار سابق وزیر قانون آغا رضا کے حق میں دستبردار ہونے کا اعلان کردیا، تفصیلات کے مطابق حلقہ پی بی 26کوئٹہ سے ضمنی انتخاب میں حصہ لینے والےآزاد امیدوار انجینئر ہادی عسکری نے مجلس وحدت مسلمین کے نامزد امیدوار آغا رضا کو اپنے گھر دعوت دی جس میں انہوں نے آغا رضا کے حق میں انتخابی مقابلے سے دستبردار ہونے کا اعلان کردیاہے ،اس موقع پر انہوں نے اپنی رہائش گاہ پر موجود اکابرین ، معززین ، سپوٹرز اور ووٹرز سے گذارش کی کہ 31دسمبر کو ایم ڈبلیوایم کے نامزد امیدوار آغا رضا کو ووٹ دیکر کامیاب بنائیں جن کا انتخابی نشان خیمہ ہے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) مجلس وحدت مسلمین اور سابق وزیر قانون آغا رضا کے سیاسی مخالفین 31دسمبر کو اپنی یقینی شکست کے خوف سے بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئے ہیں، اس حوالے سے انہوں نے ووٹرز کو گمراہ اور ایم ڈبلیوایم سے بدزن کرنے کیلئے سوشل میڈیا کو بطور ہتھیار استعمال کرنا شروع کردیاہے، گذشتہ روز ایم ڈبلیوایم کے کامیاب انتخابی جلسے، دو آزاد امیدواروں کی آغا رضا کے حق میں دستبرداری ، چیف آف ہزارہ قبائل سردار سعادت ہزارہ اور دیگر اکابرین ومعززین قوم اور عوام کی بھرپور تائید و حمایت سے خوفزدہ ہوکر ایم ڈبلیوایم کے سربراہ علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کے نام سے ایک جھوٹا اور من گھڑت بیان سوشل میڈیا پر نشر کیا ہے جس کا حقیقت سے دور تک کا کوئی تعلق نہیں ہے، ایم ڈبلیوایم کے مرکزی میڈیا سیل سے جاری ایک تردیدی بیان میں معزیزاہلیان کوئٹہ کو باخبر کیا جاتا ہے کہ ایک جعلی پوسٹ ضمنی الیکشن پی بی 26کے حوالے سے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کے پیغام کےنام سے وائرل کی جارہی ہے اس پوسٹ کا مجلس وحدت مسلمین  سے کوئی تعلق نہیں ہے ، لہذٰا افواہوں پر کان نا دھریں اور مخالفین کے جعلی پروپگینڈے کا شکارنا ہوں،ایم ڈبلیوایم کے آفیشل بیانات کے لئے مجلس وحدت مسلمین کی آفیشل ویب سائٹwww.mwmpak.orgیا آفیشل فیس بک پیج https://www.facebook.com/MWMPak.Official/?ref=bookmarks، https://www.facebook.com/AllamaRajaNasirOfficial/?ref=bookmarks وزٹ کریں ، شکریہ

وحدت نیوز(حیدرآباد) مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین ضلع حیدر آبادکے زیر اہتمام تعلیم بالغاں ام ابھیا ع اسکول،شکر الحمدللہ تعلیم کی ترویج کے سفر پر روادواں ہے اس سال ماشاءاللہ چار خواتین اور بچیوں نے پہلی کلاس میں فرسٹ، سیکنڈ،تھرڈ، فورتھ، پوزیشن لی اور ماشاء اللہ جماعت دوسری میں ،چار خواتین اور بچیوں نے فرسٹ، سیکنڈ، اور تھرڈ ،فورتھ پوزیشن لی خواھر سیمی ،اور خواھر غزالہ جعفری نے خواتین اور بچیوں میں انعام تقسیم کیے اور مدرسے کی تمام بچیوں اور خواتین کی حوصلہ افزائی کےلیے اسکارف کا تحفہ دیا جو کہ انعام بھی ہے اور مدرسے کا یونیفارم بھی ہے خواھر غزالہ نے طالبات کی بہت حوصلہ افزائی کی اور تعلیم کی اہمیت بتاتےہوئے کہا ہے علم حاصل کرنے میں عمر کی قید نیں ھوتی اور رسول خدا کا فرمان. ھے علم حاصل کرو ماں کی گود سے قبر کی آغوش تک،اخر میں خواھر سیمی نقوی نے خواھر غزالہ کا شکریہ ادا کیا کہ وہ اپنا قیمتی وقت نکال کر ائیں  دعا امام زمانہ عج سے اختتام کیا۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) چیف آف ہزارہ قبائل سردار سعادت علی خان نے ہزارہ ٹاون میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے نامزد امیدواربرائے حلقہ پی بی 26 سید محمد رضا (آغارضا) سے بھر پور تعاون اور حمایت کا اعلان کیا سردار سعادت علی خان نے کہا کہ آغا رضا ایک مناسب اور موضوع با بصیرت مخلص شخصیت ہے ہمارے ساتھ آج سے نہیں کئی دہائیوں سے تعلقات ہے پی بی 26 کے عوام انہیں اپنا قیمتی ووٹ دیکر کامیاب بنائیں ۔

آغا رضا نے کہا کہ ہم اپنے نظریاتی و جغرافیائی سرحدوں کی دفاع پر کبھی سمجھوتہ نہیں کریں گے اس موقع پر پی بی 26 کے کئی سرکردہ سیاسی سماجی شخصیات شریک تھے آخر میں مولانا افضلی نے اتحاد و اتفاق اور وطن عزیز کی سلامتی کیلئے دعا کی۔

وحدت نیوز(اصفہان) مجلس وحدت مسلمین شعبہ اصفہان کے زیر اہتمام بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح ؒکے 143ویں یوم ولادت پر "قائد و اقبال کا پاکستان" کے عنوان سے سیمینار کا انعقاد کیا گیا، سیمینار سے ایم ڈبلیوایم پاکستان کے مرکزی سیکرٹری امور خارجہ حجةالاسلام ڈاکٹر علامہ شفقت حسین شیرازی نے خصوصی خطاب کیااور بابائے قوم کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا،سیمینار میںحاضرین کو قائد اعظم کی زندگی پہ مبنی ڈاکومنٹری بھی دکھائی گئی،معزز مہمانان گرامی نے قائد اعظم کے یوم پیدائش کی مناسبت سے کیک بھی کاٹا،سیمینار میں قائد وحدت علامہ راجہ ناصرعباس جعفری حفط اللہ کا خصوصی ویڈیو پیغام بھی سنایا گیا،آخر میں مجلس وحدت مسلمین شعبہ اصفہان کے سیکرٹری جنرل مولانا تصور علی مہر نے شرکاء کا شکریہ ادا کیا،سیمینار میں طلاب و علماء نے کثیر تعداد میں شرکت کی،دعائے امام زمانہ عج سے پروگرام کا اختتام کیا گیا۔

وحدت نیوز (کراچی) دنیا اس وقت طاقت کے توازن میں تبدیلی کے دور سے گذررہی ہے، دنیا بدل رہی ہے، اس عالمی تبدیلی کے اثرات پاکستان پر بھی پڑ رہے ہیں، امریکہ فقط اس خطے سے نہیں جارہا بلکہ امریکہ کا اس خطے سے عسکری انخلاء اور سیاسی انخلاءدونوں جاری ہیں،مقاومتی بلاک نے امریکہ کی خطےکی تقسیم کے تمام ناپاک منصوبے خاک میں ملادیئے ہیں،پاکستان میں بھی بلاک کی تبدیلی کا آغاز ہوچکاہے،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا دورہ چین ، روس،افغانستان اور ایران انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ امن خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری نے انچولی سوسائٹی میں جنرل ورکرز اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر ایم ڈبلیوایم کے رہنما علامہ احمد اقبال رضوی، علامہ مقصودڈومکی ، علی حسین نقوی ، علامہ صادق جعفری سمیت عہدیداران اور کارکنان بڑی تعدادمیں موجود تھے۔ان کا کہنا تھا کہ امریکہ نے شام، افغانستان، یمن اور دیگر ممالک میں اپنے چوہد راہٹ برقرار رکھنے کیلئے 7ٹریلین ڈالر خرچ کیئے، امریکہ اتنے خطیر سرمائے کے ضیاع کے باوجود لاشوں کے سوا کچھ حاصل ناکرسکا،امریکہ ان خطوں میں نا ذخائر اور منابع پر قبضہ کرسکا نا ہی معاشی طور پر کچھ لوٹ سکا بلکہ امریکہ ہر جگہ سیاسی وعسکری شکست سے دوچارہواہے

انہوں نے مزید کہاکہ مشرق وسطیٰ کے دو بڑے چور پاکستان آرہے ہیں ، یہ جہاں بھی گئے ذلت اور رسوائی ان کا مقدر بنی ہے، مختلف ممالک میں ان کی آمد پر شدید ترین عوامی ردعمل دنیا نے دیکھا ہے،یہی وہ لوگ ہیں جنہوں نے امریکہ کے ساتھ ملکر پاکستان کو معاشی، سیاسی ،سماجی اور اجتماعی طور پر کمزور کیاہے، ہمیں ان کے خلاف متحد ہونا ہوگا، جتنا جتنا امریکہ اور اس کے حواری کمزور ہوں گے اتنا اتنا پاکستان میں امن آئے گااور وہ مضبوط ہوگا، آخر میں انہوں نے کہاکہ علی رضا عابدی کا قصور یہ تھا کہ وہ ایک ٹیلنٹڈ شیعہ سیاست دا ن تھا، افسوس کے پاکستان میں ٹیلنٹڈوہونا جرم ہے ،ہمارے ملک پر نااہل ، پشت ، نالائق اور کوتھا لوگوں کا قبضہ ہے، جنہوں نے پہلے اس ملک اور توڑا اور اب بچے کچےکو کمزور کررہے ہیں ، ہمیں ان لوگوں کے مقابل قیام کرناہے۔

وحدت نیوز (مانٹرنگ ڈیسک) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرعباس شیرازی نے ایک بین الاقوامی خبررساںادارے کو انٹریو دیتے ہوئے کہاکہ نواز شریف کے خلاف فیصلہ ملک کی عدالتی تاریخ میں ایک بڑی فتح ہے، نیب کی بھی کامیابی ہے جو کرپشن ثابت کرنے میں کامیاب رہا ہے، نیب نے اس بار پرانی غلطیاں نہیں دہرائیں۔ نواز شریف کا اصل چہرہ بےنقاب ہوگیا ہے۔ آئندہ فیوچر میں کوئی ریلف ملتا نظر نہیں آرہا۔ بصورت یہ کہ نیب کے ساتھ یہ پلی بارگین کریں، وہ اس طرح کہ اگر قانون میں کوئی گنجائش موجود ہے تو،دہائیوں سے دونوں جماعتیں اس ملک پر مسلط ہیں، عملی طور پر باری سسٹم چل رہا تھا، فرینڈلی اپوزیشن کا بھی تاثر تھا، عملاً دونوں جماعتوں نے ایک دوسرے کی کرپشن پر پردہ ڈالے رکھا ہے، کرپشن کو قانونی بنانے کی کوشش کی ہے، تمام تر دعوے ٹوپی ڈرامہ تھے، لوگ ان سے تنگ تھے، یہی وجہ تھی کہ عمران خان کی تبدیلی کا نعرہ مقبول ہوا، ایک عام آدمی نے اسے سپورٹ کیا، عمران خان نے آزاد خارجہ پالیسی کی بات کی، کڑے احتساب کی بات کی، اداروں کو مضبوط کرنے کی بات کی، اس وجہ سے لوگوں نے ان پر اعتبار کیا۔ یہ بھی پیش نظر رہے کہ پاکستان میں کوئی انقلاب نہیں آیا، بلکہ ایک اتحادی حکومت وجود میں آئی ہے اور اس حکومت نے اپنے نعروں کی بنیاد پر کام شروع کیا ہے۔ حکومت میں آنے کے بعد دیکھا یہ گیا کہ ہے کہ عمران خان نے احتساب کے معاملے پر کوئی لچک نہیں دکھائی، یہ ایک انہونی سی بات ہے، کیونکہ روایت یہی رہی ہے کہ حکومت سے پہلے نعرے کچھ اور ہوتے ہیں اور حکومت میں آنے کے بعد کچھ اور ہوتا۔ لیکن عمران خان نے ایک نیا ٹرینڈ متعارف کرا دیا ہے اور اپنے اس نعرے میں کوئی لچک نہیں دکھائی۔

انہوں نے مزید کہاکہ جن کے بارے میں تاثر تھا کہ اُن پر ہاتھ نہیں ڈالا جاسکتا، ان پر بھی ہاتھ ڈالا گیا ہے، تمام بااثر افراد کو جواب دہ بنا دیا گیا ہے، نواز شریف اور ان کی پارٹی کے کئی افراد نااہل قرار دیئے جاچکے ہیں، اب دوسری طرف بھی پیپلزپارٹی کے خلاف احتساب کا عمل شروع ہوچکا ہے، جے آئی ٹی کی رپورٹ سے لگتا ہے کہ احتسابی عمل اب سنجیدگی کے ساتھ آگے بڑھ رہا ہے۔ اب زرداری اور ان کی فیملی کے لیے مشکلات زیادہ ہیں، اب سوئٹزرلینڈ سے پیسے کا مطالبہ کیا جانے کا امکان ہے۔ اب دنیا دیکھ رہی ہے کہ میگاکرپشن کرنے والوں پر ہاتھ ڈالا جا رہا ہے۔ پیپلزپارٹی اور نون لیگ کا سیاسی منظر نامہ تاریک ہے، پیپلزپارٹی کی عوامی مقبولیت رہی گی، التبہ ٹاپ لیڈر شپ کو سنجیدہ نتائج بھگتنا پڑیں گے، جن میں آصف علی زرداری، فریال تالپور اور ان کی ٹیم شامل ہے اور انہیں کرپشن پر سزائیں ہوں گی، نون لیگ کے اٹھارہ ضلعی ناظم پی ٹی آئی میں شامل ہوگئے ہیں، اس پارٹی میں توڑ پھوڑ کا عمل جاری ہے، اس سے لگ رہا ہے کہ نون لیگ کا مستقبل تاریک ہے، ویسے بھی اسے اقتدار کی جماعت کہا جاتا ہے۔

انہوںنے مزید کہاکہ دونوں جماعتیں اس لیے سیاسی کیسز کہہ رہی ہیں کیونکہ انہوں نے یہ کھیل کھیلا ہے، اقتدار میں دونوں جماعتوں نے بظاہر ایک دوسرے کے احستاب کا نام لیا، لیکن عملاً ایک دوسرے کو سپیس دی ہے۔ یہ ماضی کی طرح معاملات کو گڈمڈ کرنا چاہتی ہیں، کیونکہ ماضی میں سیاسی جماعتوں نے ایک دوسرے کے خلاف سیاسی کیسز بنائے، اب یہ اسی تناظر میں ان معاملات کو سیاسی بنانا چاہتی ہیں۔ میں سمجھتا ہوں کہ یہ ان چیزوں میں کامیاب نہیں ہوسکیں گے، چیزیں ثبوت کے ساتھ سامنے آرہی ہیں، سسٹم بھی انہی کا بنایا ہوا ہے، چیئرمین نیب بھی انہی کا لگایا ہوا ہے اور کیسز بھی پہلے کے چل رہے ہیں، تو پھر یہ کس بنیاد پر ان کیسز کو سیاسی قرار دے سکتے ہیں۔ چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال کوئی معمولی آدمی نہیں ہیں، کئی کمیشنز کو ہیڈ کرچکے ہیں، جاوید اقبال ایک باصلاحیت آدمی ہیں، انہوں نے نیب کو ایک ادارے کے طور پر بنانا شروع کر دیا ہے۔ایک بات جو فی الحال واضح نہیں ہے، وہ یہ اکراس دی بورڈ احتساب نظر نہیں آرہا، اس کو واضح ہونا چاہیئے، اگر حکومت اور اتحادیوں پر الزامات ہیں تو ان پر بھی کارروائی ہونی چاہیئے، یہ بات بھی واضح ہے کہ جہانگیر ترین انہی عدالتوں سے نااہل ہوچکے ہیں، علیم خان کے خلاف کیسز چل رہے ہیں، اعلیٰ عدلیہ نے پی ٹی آئی کے ایم این ایز پر ہاتھ ڈالا ہے، اعظم سواتی کی برطرفی ہوئی ہے، بابر اعوان نے خود استعفیٰ دیا ہے۔ پی ٹی آئی نے اچھی رویت ڈالی ہے کہ اگر الزام لگا ہے تو وزراء نے مستعفی ہونے کو ترجیح دی ہے، جو اچھی چیز ہے۔

مشرق وسطیٰ خصوصاًشام اور یمن کے حالات پر اظہار خیال کرتے ہوئے ناصرشیرازی نے کہاکہ امریکہ مشرق وسطیٰ میں ناکام ہوا ہے، اس وقت اس کیلئے مشکل ہوگیا ہے کہ وہ شام میں اپنی پوزیشن کو برقرار رکھے، کیوںکہ طنف کا علاقہ جہاں امریکی موجود ہیں، چاروں طرف سے گھر چکا ہے۔ کرد جن پر امریکیوں کو اعتماد ہے، وہ اس وقت ترکی کے ساتھ حالت جنگ میں ہیں۔ ایران نے جو بلاسٹک میزائل شام میں داعش کے ٹھکانوں پر مارے ہیں، دراصل وہ امریکی انسٹالیشن کے دائیں بائیں گرے ہیں، نام داعش کا لیا گیا مگر پیغام امریکیوں کو دیا گیا۔ اس سے امریکیوں کو واضح پیغام دیا گیا ہے کہ امریکی انسٹالیشن ایران کے ٹارگٹ پر ہیں۔ دوسرا ٹرمپ ایک غیر متوازن آدمی ہے اور اس نے اپنے فیصلوں سے دنیا کو حیران کیا ہے، شروع میں اس نے کہا تھا کہ وہ شام سے نکلیں گے اور سعودیہ کے خلاف اسٹینڈ لیں گے، مگر پھر سعودیہ کا اتحادی بنا اور سعودیہ ہی کے کہنے پر شام میں رہنے کا اعلان کیا۔

انہوں نے کہاکہ ہر گزرتے دن کے ساتھ شام میں دمشق حکومت کے قدم مضبوط ہوتے جا رہے ہیں اور امریکہ کے لیے وہاں زمین تنگ ہونا شروع ہوگئی ہے۔ نہاد نام سپر طاقت کی شکست پر اسٹمپ لگ چکی ہے۔ ٹرمپ بنیادی طور پر ایک بزنس مین آدمی ہے، وہ سوچ رہا ہے کہ شام میں نہ تیل کے کنویں ہاتھ میں آئے ہیں، نہ گیس کے ذخائر ہماری دسترس میں ہیں، نہ حکومتی امور پر میں کوئی مداخلت ہے تو پھر ایسے میں شام میں کیوں رہا جائے۔ امریکہ اس وقت شام اور افغانستان میں اپنی پالیسیوں پر نظرثانی کر رہا ہے، وہ جنگ کے اخراجات کم کرنا چاہتا ہے۔ خود امریکہ میں اپوزیشن نے شام سے نکلنے کو ایران اور شام کی فتح قرار دیا ہے۔ یہ امریکہ کے اتحادی داعش اور سعودی عرب کی ناکامی ہے۔ امریکی کی مشرق وسطیٰ کی مجموعی طور پر پالیسی ناکام ہوگئی ہے، یمن، عراق اور شام سمیت اوور آل پالیسی ناکام ہوئی ہے۔ تمام ملکوں کے لیے واضح ہوگیا ہے کہ امریکہ کسی کا دوست نہیں ہے، جہاں جاتے ہیں، تباہی اور بربادی کا سامان لیکر جاتے ہیں۔امریکہ طالبان مذاکرات کےحوالے سے ان کا کہنا تھا کہ افغان مذاکرات ناقابل فہم ہیں، اس لیے بھی کہ طالبان نے کہا تھا کہ افغانستان میں غیر ملکی فووسز کا وجود نہیں ہونا چاہیئے، جب آپ کسی کو ٹیبل پر بیٹھاتے ہیں تو اس کا مطلب یہ لیا جاتا ہے کہ آپ اسے اسٹیک ہولڈر تسلیم کرچکے ہیں۔ امریکی اس حوالے سے کامیاب ہوئے ہیں کہ وہ اپنے آپ کو کسی نہ کسی حد تک اسٹیک ہولڈر منوانے میں کامیاب ہوئے ہیں۔

Page 6 of 903

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree