The Latest

وحدت نیوز  (حیدرآباد)  مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی پولیٹیکل سیکرٹری اسد عباس نقوی نے جمعیت علمائے پاکستان کے صدر اور امیدوار NA-227 ڈاکٹر صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر کے ہمراہ پریس کلب حیدرآباد میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ صاحبزادہ ابو الخیر محمد زبیر نے ملک میں فرقہ واریت کو ختم کرنے اور دہشتگردوں اور ملک دشمن جماعتوں کا پورے ملک میں مقابلہ کیا ہے اور امت مسلمہ کو جوڑنے کیلئے آپ کی کوششیں لائق تحسین ہیں، آپ کے ان ہی کارناموں کی بنیاد پر مجلس وحدت مسلمین نے حلقہ NA 227 پر صاحبزادہ ابو الخیر محمد زبیر کی مکمل حمایت کا اعلان کیا ہے۔اسد عباس نقوی نے کہا کہ ہم صاحبزادہ ابو الخیر محمد زبیر کو اپنی جماعت کی طرف سے یقین دلاتا ہوں کہ یہ الیکشن صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر اور JUPکا الیکشن نہیں ہے بلکہ اب مجلس وحدت المسلمین کا بھی الیکشن بن گیا ہے، ان شاء اللہ صاحبزادہ ابو الخیر محمد زبیر 25 جولائی کو ہونیوالے انتخابات میں کامیاب ہوکر پارلیمنٹ میں پہنچیں گے اور اتحاد امت کیلئے بھر پور کردار ادا کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنی جماعت کے تمام ذمہ داران کو ہدایت کر دی ہے کہ وہ صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر کی الیکشن مہم چلائیں اور ہر فورم پر ان کی کامیابی کیلئے کردار ادا کریں۔

 اسد نقوی نے مزید کہا کہ ہمیں امید ہے کہ صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر کامیاب ہوکر دنیا بھر میں اتحاد امت کیلئے کوششیں جاری رکھیں گے اور پاکستان کے مظلوموں کی آواز بن کر اُبھریں گے اور فرقہ واریت کے خاتمے کیلئے بھرپور کردار ادا کریں گے۔جے یو پی کے صدر ڈاکٹر صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر نے کہا کہ ہم راجہ ناصر عباس کا اور مجلس وحدت مسلمین کا شکریہ ادا کرتے ہیں، انہوں نے ہماری حمایت کی ہمارا یہ اتحاد یہیں نہیں بلکہ ملی یکجہتی کونسل میں بھی ہم ساتھ کام کر رہے ہیں، سازشی عناصر جو پاکستان میں فرقہ وارانہ آگ بھڑکانے کی سازشیں کر رہے ہیں، ایک دوسرے مسالک کیخلاف زہر اگل رہے ہیں، ایک دوسرے کے قتل کے منصوبے بنا رہے ہیں، ایک دوسرے کی مساجد اور خانقاہوں اور امام بارگاہوں پر حملہ کرکے اور ایک دوسرے کو کافر کہہ کر اُمت کے اتحاد کو پارہ پارہ کرنے کی سازشیں کرتے رہے ہیں، ان سازشی عناصر کا مقابلہ کرنے کیلئے اتحاد امت کا عمل مظاہرہ کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سیکولر عناصر مغربی ایجنڈے کو کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے، ہم اتحاد کے ذریعے اسلام اور مسلمانوں کو لڑانے کی ہر سازش کو ناکام بنائیں گے اور امت مسلمہ میں اتحاد یگانگت اور بھائی چارے کی فضاء قائم کر کے اخوت اور بھائی چارے کو فروغ دیں گے۔

واضح رہے کہ اسدعباس نقوی نے دورہ حیدرآباد کے دوران معروف سیاسی رہنما صفدرعباسی اور ناہید خان سے بھی ان کے دفتر میں ملاقات کی، اسد عباس نقوی ، ناہید خان اور صفدر عباسی کے درمیان موجودہ ملکی سیاسی صورتحال اور قومی انتخابات کے حوالے سے تفصیلی بات چیت ہوئی، اس موقع پر ایم ڈبلیوایم کے دیگر صوبائی اور ضلعی رہنمابھی موجود تھے ۔

وحدت نیوز  (پنڈی گھیپ)  مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے پنڈی گھیپ میں اتحادی جماعت پی ٹی آئی کے امیدوار برائے قومی اسمبلی میجر (ر) طاہر صادق اور امیدوار برائے صوبائی اسمبلی کرنل(ر) انور خان کی 14 دیہاتوں سے حمایت کے سلسلے میں منعقدہ تقریب میں مرکزی رہنما مجلس وحدت مسلمین برادر نثار فیضی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انشااللہ ملک بھر میں مجلس وحدت مسلمین کے کارکنان الیکشن مہم کو چیلنج کے طور پر چلائیں گے، پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ ہمارا الائنس ملک سے دہشتگردوں ان کے سرپرستوں اور تکفیری گروہ کو شکست دینے میں معاون ثابت ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ انشااللہ 25جولائی پاکستان اور پاکستانی عوام کی فتح کا دن ثابت ہوگا،کارنر میٹنگ میں مجلس وحدت مسلمین کے چودہ یونٹس کے کارکنان و ذمہ داران شریک ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار برائے قومی اسمبلی کرنل(ر)انور خان نے اپنے خطاب میں مجلس وحدت مسلمین کے قائدین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ایم ڈبلیوایم نے عملی طور پر تحریک انصاف کا ساتھ دے ثابت کیا ہے کہ یہ جماعت اور اس کے قائدین قول وفعل کے سچے ہیں انشااللہ ہمارا یہ سفر پرامن مستحکم اور شدت پسندی سے پاک پاکستان کے حصول تک جاری رہے گاپنڈی گھیپ میں مجلس وحدت مسلمین کے لوکل رہنماوں اور کارکنان کی کثیر تعداد کارنر میٹنگ میں شریک ہوئے۔

وحدت نیوز(لاہور) لاہور میں ہونے والی شدید بارشوں کے باعث اموات اور نقصانات کے بعدمجلس وحدت مسلمین کے صوبائی سیکرٹری جنرل پنجاب علامہ سید مبارک علی موسوی کا کہنا تھا کہ لاہور کو پیرس بنانے کے دعوے جھوٹے نکلے، پیرس میں بارش ہو تو سڑکیں پانی میں نہیں ڈوبتیں، لاہور پر کھربوں روپے لگا ئے گئے لیکن سڑکوں کا برا حال ہے۔

علامہ مبارک موسوی نے کہا کہ اگر قوم کا پیسہ ایمانداری و دیانتداری سے خرچ کیا جاتا تو آج لاہور کی یہ صورتحال نہ ہوتی لیکن شریف خاندان نے عوام کے ٹیکس کا سارا پیسہ رائیونڈ پرلگا دیا اور 40 ارب روپے اشتہارات کے لیے استعمال کیے گئے، عوام کو پتہ چل گیا ہے کہ لاہور میں کیا ترقی ہوئی، اب شہباز شریف اس لئے باہر نہیں نکل رہے کہ انہیں لوگوں کا ڈر ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ عوام کو چاہیے کہ 25 جولائی کو ان جھوٹے سیاستدانوں کو ووٹ کی طاقت سے مسترد کر دیں۔

وحدت نیوز(لاہور) ن لیگ مکافات عمل کا شکار ہے،عوام لٹیروں سے پائی پائی کا حساب لے گی،پنجاب میں انتقامی کاروائیوں کا جواب ووٹ کی طاقت سے دینگے،پنجاب بھر میں بھرپور انتخابی مہم چلائیں گے،پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ مل کر الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں،انشااللہ 25جولائی کو عوام دشمن قوتوں کو شکست ہوگی،ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل پروفیسر ڈاکٹر افتخار حسین نقوی نے صوبائی الیکشن سیل میں کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،انہوں کہا سابق حکمرانوں نے ترقیاتی منصوبوں کے نام پر قومی خزانے پر شب خون مارا،سڑکوں کا جال بچھانے کے دعویداروں کا پول ایک دن کی بارش نے کھول کر دیا ہے،پنجاب میں من پسند لوگوں کو نوازا گیا،نیب اور عدلیہ ان لٹیروں کا بے رحمانہ احتساب کرے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی رہنماو مرکزی سیکرٹری سیاسیات اسد عباس نقوی نے کہا ہے کہ بروقت شفاف الیکشن کرانے کے عمل سے جموریت مضبوط ہوگی، الیکشن سے قبل ہی دھاندلی کا وایلا مچانے والے اپنی شکست سے خائف ہیں احتساب کا عمل سخت اوربے رحمانہ ہونا چاہیے اور اس ضمن میں بلاتفریق احتساب کے کٹہرے میں لایا جائے عام انتخابات کے سلسلے میں پنجاب او رسندھ میں مجلس وحدت مسلمین نے تحریک انصاف کے ساتھ انتخابی اتحاد کیا ہے پاکستان کو قائد اعظم اورعلامہ اقبال کا پاکستان بنانے کیلئے مجلس وحدت مسلمین اپنی جدوجہد جاری رکھے گی ،اسلامی پاکستان ہی ہماری منزل ہے ان خیالات کا اظہار انھوں نے مرکزی الیکشن سیل کے کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

 مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی رہنماو مرکزی سیکرٹری سیاسیات اسد عباس نقوی نے کہا کہ جموریت کا تسلسل خوش آئند ہے عوامی سطح پر بھی شعوربلندہوتاجارہا ہے سیاسی پارٹیوں میں بھی سیاست دان جمہوری کلچر کو پروان چڑھائیں تاکہ سیاسی جماعتوں کے اندربھی سلیکشن کے بجائے انتخابی عمل سے نظریاتی کارکنا ن آگے آسکیں ،انھوں نے کہا کہ احتسا ب کے عمل کو مذیدسخت اوربے رحم بنایا جائے اور احتساب سب کا بلا تفریق کیا جائے کرپشن کی لعنت کو جڑسے اکھاڑنے کیلئے اب بے رحمانہ احتساب وقت کی اہم ترین ضرورت ہے اوراحتسابی کٹہرے میں سب کولایاجائے ہمار املک غیر ملکی قرضوں کے بوجھ تلے دب کر رہ گیاہے ہرحکومت قرضے اتارنے کے بجائے مذیدقرضوں کو بوجھ ملک پر ڈال دیتے ہیں ایسے میں سخت اقدامات کرنا ہونگے۔

یمن میں کوئی انسان نہیں رہتا

وحدت نیوز (آرٹیکل) ریاض ، سعودی عرب کا دارلحکومت ہے، جی ہاں یہ وہی مقام ہے جہاں کچھ عرصہ پہلے مسٹر ٹرمپ اور شاہ سلمان نے ایک دوسرے کی بانہوں میں بانہیں ڈال کر رقص کیا تھا،گزشتہ روز  انصاراللہ یمن نے ریاض پر متعدد بیلسٹک میزائل داغے،انصار اللہ کے مطابق  تمام میزائل ہدف پر لگے جبکہ سعودی ذرائع کے مطابق حملہ ناکام بنا دیا گیا، ہم جانتے ہیں کہ حالتِ جنگ میں اس طرح کی متضاد اطلاعات معمول کی بات ہیں۔

 انصاراللہ  کے زیرکنٹرول المثیرہ ٹی وی کے مطابق میزائلوں نے اپنے اہداف کودرستگی کے ساتھ نشانہ بنایا ہے ۔ اسی طرح برطانوی خبررساں ادارے کے مطابق ریاض کے اوپر فضامیں  زبردست روشنی کے ساتھ چھ زوردار دھماکے ہوئےاور متعدد مقامات سے دھواں بھی اٹھتے ہوئے دکھائی دیا۔یاد رہے کہ یہ دسمبر ۲۰۱۷سے اب تک  ریاض پرہونے والا چھٹا  میزائل حملہ ہے۔

قابلِ توجہ بات یہ ہے کہ یہ  میزائل حملہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے کہ جب  یمن کی مغربی بندرگاہ الحدیدہ پر متحدہ  عرب امارات کی قیادت میں سعودی اتحاد کا ایک بڑا حملہ جاری ہے اور اس حملے کو سنہری فتح کا نام دیا گیا ہے۔ تیرہ جون ۲۰۱۸سےالحدیدہ پر جاری  اس حملے میں ابھی تک سعودی اتحاد سوائے انسانی جانوں کے زیاں کے اور کوئی  ہدف پورا نہیں کر سکا لیکن دوسری طرف انصاراللہ کے میزائل ریاض کی فضاوں میں پھٹ چکے ہیں، عرب ٹی وی کے مطابق متحدہ عرب امارات کے وزیرمملکت برائے خارجہ امور انور قرقاش  نے حوثیوں کے اسلحہ اور ان کے ماہر نشانہ بازوں کے بارے میں سامنے آنے والی رپورٹس کے بعد ٹوئٹر پر جو متعدد ٹویٹس کئے ہیں ان سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس وقت سعودی اتحاد کے اوسان خطا ہو چکے ہیں۔

سعودی عرب نے اب تک شام، عراق، بحرین اور یمن میں جہاں بھی مداخلت کی ہے وہاں عمارتوں کے  کھنڈرات اور انسانی  لاشوں کے سوا کسی مقصد کو  حاصل نہیں  کیا ہے یا بنی نوعِ انسان کو کوئی فائدہ نہیں پہنچایا ہے۔ اس وقت پوری دنیا میں سعودی عرب کے تیار شدہ القاعدہ ، طالبان  اور داعشی ٹولے بری طرح ناکام اور پسپا ہو چکے ہیں۔

سعودی اتحاد اپنی سابقہ شکستوں کی روشنی میں یہ بخوبی جانتا ہے کہ وہ یمن پر اپنا تسلط کسی صورت بھی قائم نہیں کر سکتا تاہم مغرب اور خصوصاً امریکہ کو مطمئن کرنے کے لئے   اس نے اس  وقت یمن کو تختہ مشق بنا رکھا ہے۔

دوسری طرف اب امریکہ و مغرب کو بھی اچھی طرح معلوم ہے کہ سعودی اتحاد کی کارروائیوں سےکوئی کامیابی حاصل ہونے والی نہیں۔چنانچہ یمن پر حملے کے حوالے سے خود امریکہ و مغرب پر بھی مایوسی کی کیفیت طاری ہے۔

سعودی عرب کے سامنے مندرجہ زیل اہم اہداف ہیں جو جنگ کے ذریعے کسی طور بھی پورے ہوتے دکھائی نہیں دے رہے:

۱۔ یمن کو سعودی عرب کا بغل بچہ بنا کر یمن کی سرز مین کو دہشت گردوں کی جنت کے طور پر استعمال کیا جائے

۲۔ مشرقِ وسطیٰ کی تمام عرب ریاستوں کو امریکہ کی قیادت میں متحد کیا جائے

۳۔خطے سے ایران اور حزب اللہ کا رعب ختم کیا جائے

۴۔یمن کے معدنی ذخائر پر سعودی عرب کا مکمل تسلط قائم کیا جائے

اربابِ دانش جانتے ہیں کہ جنگ مزید تباہی و بربادی تو پھیلا سکتی ہے لیکن اس سے سعودی اتحاد کو کوئی کامیابی ملنے والی نہیں، اب سعودی عرب ایک ایسی مشکل میں گرفتار ہے کہ  وہ نہ ہی تو یمن میں آسانی کے ساتھ ٹھہر سکتا ہے اور نہ ہی یمن سے باعزت طور پر نکل سکتا ہے، سعودی عرب اگر دیگر ممالک کی طرح یمن سے بھی شکست خوردہ ہو کر نکلتا ہے تو ساری دنیا خصوصاً امریکہ و مغرب کی نگاہوں میں اس کی رہی سہی ساکھ بھی ختم ہوجائے گی اور دوسرا مسئلہ جو کہ اس سے بھی بڑا ہے ، وہ یہ ہے کہ اب  سعودی عرب کے پیچھے ہٹنے سے انصاراللہ رسماً پورے یمن کی مالک بن جائیگی اور سعودی اتحاد کے مقاصد کے بر عکس منطقے میں ایران اور حزب اللہ کی مقبولیت میں مزید اضافہ ہوگا۔

ریاض کی فضاوں میں پھٹتے ہوئے میزائل جہاں سعودی عرب کی شکست پر مہر تصدیق ثبت کرتے ہیں وہیں اقوامِ عالم کو بھی اپنا فریضہ انجام دینے کی یاد دہانی کراتے ہیں۔

سعودی اتحاد کی اس رسوائی اور پسپائی کے عالم میں عالمی برادری کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ یمن میں بسنے والے دوکروڑ  سے زائد انسانوں کی حفاظت کے لئے آواز بلند کرے۔یمن میں اس وقت جو انسانیت سوز حالات ہیں ان کے پیشِ نظر عالمی برادری کو  یا تو بھرپور احتجاج کرنا چاہیے  اور یا پھر یہ اعلان کر دینا چاہیے کہ یمن میں کوئی انسان نہیں رہتا۔


تحریر۔۔نذر حافی

This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

وحدت نیوز(ڈیرہ اسماعیل خان) مجلس وحدت مسلمین نے پاکستان تحریک انصاف سے انتخابی اتحاد کا اعلان کرنے کے بعد قومی و صوبائی اسمبلی کے اپنے دونوں امیدوار سردار علی امین خان گنڈہ پور کے حق میں دستبردار کرلئے ہیں۔ ایم ڈبلیو ایم ڈیرہ اسماعیل خان اور تحریک انصاف پاکستان این اے 38 اور پی کے 97 پر باقاعدہ سیاسی اتحاد ہو گیا ہے۔ ایم ڈبلیو ایم کے این اے 38 کے نامزد امیدوار سید اسد زیدی اور پی کے 97 کے نامزد امیدوار مولانا عبدالرحمن المعروف (مولانا اظہرندیم) تحریک انصاف کے حق میں دست بردار ہو گئے ہیں۔ اس اتحاد اور سیاسی دستبرداری کا باقاعدہ اعلان سردار علی امین گنڈہ پور کے فارم ہاؤس پہ پریس کانفرنس میں باقاعدہ طور پر کیا گیا، اس موقع پر ایم ڈبلیوایم ضلع ڈیرہ اسماعیل خان کے سیکریٹری جنرل علامہ غضنفرعباس نقوی ودیگر رہنما بھی موجود تھے ۔

وحدت نیوز (لاہور) مون سون کی ایک ہی بارش سے ن لیگ کی دس سالہ حکومتی کارکردگی کا پول کھل گیا ہے،عوام الیکشن میں ترقیاتی کام کے نام پر عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے والوں کا بے رحمانہ احتساب کریں،ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین لاہور کے سیکرٹری جنرل علامہ حسن ہمدانی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ لاہور کو پیرس بنانے کے دعویٰ کرنے والے بے نقاب ہو چکے ہیں،قومی خزانے کو میٹرو اور اورنج لائن کے نام پر لوٹنے والوں کا یوم حساب قریب آپہنچا ہے،آل شریف کے گڈ گورنس کا حال قوم کے سامنے ہے،علامہ حسن ہمدانی نے وحدت یوتھ کے کارکنان کو ہدایت کی ہے کہ وہ بارش سے متاثرہ علاقوں میں ریلف کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں ،وحدت یوتھ متاثرین کی امداد کے لئے مختلف علاقوں میں کیمپس کا انعقاد کریگی۔

وحدت نیوز (گلگت) پرائمری سکول ہسپتال کالونی کو ختم کرنے کا فیصلہ محکمہ تعلیم کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ہسپتال کالونی میں رہائش پذیر آبادی کو تعلیم کی بنیادی سہولت ختم کرنا انسانی حقوق کی پامالی ہے،اسکول میں اگر کوئی کمی بیشی ہے تو اس کو دور کیا جانا چاہئے نہ کو سکول کو سرے سے ختم کیا جائے،سیکرٹری تعلیم اس صورت حال کا نوٹس لے۔

مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے سیکریٹری اطلاعات علی حیدر نے کہا ہے کہ ہسپتال کالونی تابرمس صرف ایک پرائمری سکول ہے جسے محکمہ تعلیم کا بند کرنے کا ارادہ ہے۔انہوں نے متاثرہ بچوں کے والدین کے نمائندہ وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ تعلیم ایک عرصے سے فالج زدہ ہوچکا ہے اور سرکاری سکولوں میں بہتر تعلیم میسر نہ آنے کی وجہ سے والدین کو بھاری فیسیں ادا کرکے بچوں کو پرائیویٹ سکولوں میں بھیجنے پر مجبور ہیں جبکہ تمام تر مراعات اور تنخواہوںکے باوجود سرکاری تعلیم ادارے ناکام اور پرائیویٹ ادارے کامیاب جارہے ہیں۔ایک سازش کے تحت سرکاری اداروں کا ناکام بنایا جارہا ہے تاکہ پرائیویٹ ادارے کامیاب ہوں اور غریب و نادار افراد کے بچوں کو اچھی اور مفت تعلیم کے مواقع میسر نہ ہوں۔

انہوں نے کہا کہ آفیسران سکولوں کی کارکردگی بہتر بنانے کی بجائے سکولوں کا بند کرنے کے پیچھے پڑے دکھائی دیتے ہیں اور یہ سلسلہ چل پڑا تو گلگت بلتستان میں بہت سارے سرکاری سکول بند ہوجائینگے۔انہوں نے سیکرٹری ایجوکیشن سے مطالبہ کیا کہ اس فیصلے کے خلاف فوری نوٹس لے اور سکول کو بند کرنے کا فیصلہ واپس لیکر بچوں کی تعلیم کو یقینی بنائے۔

وحدت نیوز (لاڑکانہ)  مجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکریٹری جنرل علامہ مقصود علی ڈومکی نے انتخابی مہم کے حوالے سے لاڑکانہ کا دورہ کیا، لاڑکانہ میں ضلعی سیکریٹری جنرل مولانا محمد علی شر، امیدوار پی ایس 11 برادر صابر حسین ابڑو اور دیگر تنظیمی ساتھیوں کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ بعد ازاں سید فضل حسین شاہ کے مزار پر حاضری دی، تنظیمی ذمہ داران سے میٹنگ کی۔ اس موقع پر این اے 200 کے آزاد امیدوار علامہ مشتاق حسین مشہدی نے صوبائی سیکریٹری جنرل سے ملاقات کی اور الیکشن میں حمایت کی اپیل کی۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ مقصود ڈومکی نے کہا کہ جن جماعتوں نے پانچ سال، دس سال ملک پر حکومت کی، ان کا احتساب عوام کا حق ہے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن میں پیسے کا استعمال اور ضمیروں کی خرید و فروخت مکروہ دھندا ہے، جس کا سدباب ضروری ہے، سرعام ضمیروں کی خرید و فروخت جاری ہے، مگر الیکشن کمیشن کو نظر نہیں آرہا۔

علامہ مقصود ڈومکی نے کہا کہ الیکشن میں ووٹ اہلیت اور صلاحیت کی بنیاد پر دیا جائے، اسمبلی میں سرمایہ داروں، جاگیرداروں، چوہدریوں اور نوابوں کی بجائے اب ہاری، مزدور، کسان اور غریب طبقے کی نمائندگی ہونی چاہئے۔ انہوں نے لاڑکانہ ڈویژن میں ایم ڈبلیو ایم کے انتخابی امیدواروں کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ پی ایس 11 لاڑکانہ پر صابر حسین ابڑو، پی ایس 15 میرو خان ضلع قمبر شہدادکوٹ پر مولانا محمد علی شر، پی ایس 9 عنایت علی جتوئی، پی ایس 7 شکارپور سے اصغر علی سیٹھار، این اے 197 کشمور سے میر فائق علی جکھرانی مجلس وحدت مسلمین کے ٹکٹ پر الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں۔

Page 4 of 865

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree